سٹیٹ بنک نے15 فروری سے 40 ہزار روپے کے انعامی بانڈز کا اجراء روک دیا

سرکلر کے مطابق پہلے سے جاری کردہ 40 ہزار روپے کے انعامی بانڈز قائم رہیں گے

255

اسلام آباد: سٹیٹ بنک آف پاکستان نے 15 فروری سے 40 ہزار روپے مالیت کے انعامی بانڈز کا اجراء روک دیا کیونکہ اس کے ذریعے کالا دھن سفید کرنے کی اطلاعات تھیں.

ایک انگریزی اخبار کی رپورٹ کے مطابق سٹیٹ بنک کی جانب سے ایک سرکلر جاری کیا گیا ہے جس میں 15 فروری سے ملک بھر میں 40 ہزار روپے کے نئے انعامی بانڈز جاری کرنے سے روک دیا گیا ہے، سرکلر کے مطابق نیشنل سیونگ سینٹرز اور کمرشل بینکوں کو بھی 15 فروری کے بعد سے نئے انعامی بانڈز جاری کرنے کی اجازت نہیں ہوگی۔

سرکلر کے مطابق پہلے سے جاری کردہ 40 ہزار روپے کے انعامی بانڈز قائم رہیں گے تاہم 15 فروری سے 40 ہزار روپے مالیت کا مزید کوئی انعامی بانڈ جاری نہیں ہوگا۔

سٹیٹ بنک نے یہ سرکلر حکومت کی جانب سے سینٹرل ڈائریکٹوریٹ آف نیشنل سیونگز کو 40 ہزارروپے کے نئے بانڈز کی پرنٹنگ روکے جانے کے بعد جاری کیا گیا ہے.

دوسری جانب اسٹیٹ بینک آف پاکستان اور بینکنگ سروسز کارپوریشن کے تمام دفاتر کو کل دفتری اوقات ختم ہونے سے پہلے پہلے فروخت ہونے والے انعامی بانڈز کی فہرست (سیریز) کی تفصیلات فراہم کر نے کی ہدایات جاری کردی گئی ہے۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here