گوادر میں نئے ایئرپورٹ اور ہسپتال کی تعمیر کا کام رواں سال سال کی پہلی سہ ماہی میں شروع ہو گا، سی پیک سیکریٹریٹ

321

اسلام آباد: گوادر میں نئے ایئرپورٹ، فنی و پیشہ ورانہ تربیت کے مرکز اور ہسپتال کی تعمیر کا کام رواں سال سال کی پہلی سہ ماہی میں شروع ہو گا۔ سی پیک سیکریٹریٹ کے حکام نے ’’اے پی پی‘‘ کو بتایا کہ سی پیک کے تحت گوادر میں نئے بین الاقوامی ایئرپورٹ، فنی و پیشہ ورانہ تربیت کے ادارے اور پاک چین دوستی ہسپتال کے منصوبوں کے ڈیزائن اور فزیبلٹی کا بنیادی کام پہلے ہی مکمل کیا جا چکا ہے اور رواں سال کی پہلی سہ ماہی میں کام شروع کیا جائے گا۔
انہوں نے کہا کہ نئے بین الاقوامی ایئرپورٹ کی تعمیر سے سی پیک کے فریم ورک میں ایک اہم مقام حاصل ہو جائے گا جبکہ اس سے گوادر عالمی سطح پر ایوی ایشن کی صنعت کا ایک اہم مرکز بھی بنے گا۔
انہوں نے کہا کہ اس ایئرپورٹ پر A-380 بوئنگ سمیت دنیا کے دیگر بڑے سے بڑے جہازوں کی ہینڈلنگ کی سہولیات دستیاب ہوں گی جس کا مقصد بین الاقوامی سرمایہ کاروں اور سیاحوں کی آمد و رفت میں سہولیات فراہم کرنا ہے۔
اس حوالے سے سول ایوی ایشن اتھارٹی نے موجودہ ایئرپورٹ کے شمال مشرق میں 26 کلومیٹر دوری پر تین ہزار ایکڑ زمین کی نشاندہی کی ہے۔ نئے ایئرپورٹ کو بین الاقوامی سٹیٹس حاصل ہوگا جو اوپن سکائی پالیسی کے تحت چلایا جائے گا۔ اسی دوران موجودہ ایئرپورٹ کو بھی بڑے طیاروں کی آمد و رفت کے قابل بنانے کے لئے اقدامات کئے جائیں گے۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here