گوگل، یاہو اور بنگ نے راتوں رات پاکستانی روپے کی قدر بڑھا دی

137

معروف سرچ انجن گوگل، یاہو اور بنگ نے راتوں رات پاکستانی کرنسی کی قدر بڑھا دی اور ڈالر، یورو، ریال اور اماراتی درہم سمیت غیر ملکی کرنسی کے غلط ریٹس دکھانے لگا، تاہم میڈیا پر خبر نشر ہوئی تو چندگھنٹوں بعد ہی غلطی درست کرلی گئی۔


گذشتہ برس نومبر میں ایک ہی دن میں ڈالر کی قدر میں ریکارڈ اضافہ ہوا تھا تاہم گذشتہ رات آئی ٹی کی دنیا پر راج کرنے والے ان سرچ انجنوں نے ڈالر کی قدر میں کمی کے سب ریکارڈ توڑ ڈالے۔
مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت بھلے 139 روپے ہی کیوں نہ ہو لیکن سرچ انجنز ڈالر کی قیمت صرف 76 روپے 25 پیسے پر لے آئے۔
ایسا صرف ان سرچ انجنز پر ہی نہیں‌ ہوا بلکہ کئی ایکسچینج کمپنیز کی ویب سائٹس پر بھی روپے کی قدر میں ریکارڈ اضافہ دکھایا گیا.

ڈالر کے علاوہ ان ویب سائٹس کے کرنسی کنورٹر صفحے پر امارتی درہم 20 روپے 76 پیسے اور سعودی ریال 20 روپے 33 پیسے کا نظر آیا جبکہ ایک یورو 87 روپے 3 پیسے کا خریدا جاسکتا تھا۔ اسی طرح ہر کرنسی کے مقابلے میں پاکستانی کرنسی کی شرح بڑھا دی گئی۔
آئی ٹی ماہرین کا کہنا ہے کہ کرنسی کنورٹر پر پاکستانی روپے اور دیگر کرنسیوں کے شرح مبادلہ کے غلط نتائج پروگرامنگ کی غلطی کا نتیجہ ہوسکتے ہیں جسے میڈیا پر خبر نشر ہونے کے چندگھنٹوں بعد ہی درست کرلیا گیا۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here