جی سی سی میں واپسی کیلئے قطر کو اقدامات کرنا پڑیں گے ،سعودی وزیرخارجہ

قطر کے خلاف مؤقف اس لیے اختیار کیا گیا ہے کہ اس کو پالیسیاں تبدیل کرنے پر مجبور کیا جاسکے۔

92
Saudi Arabia Foreign Minister, Adel bin Ahmed Al-Jubeir gestures while speaking during his and Russian Foreign Minister Sergey Lavrov's news conference after their meeting in Moscow, Russia, Tuesday, Aug. 11, 2015. Pressing to mediate the Syrian conflict, Russia on Tuesday hosted the Saudi foreign minister for talks that revealed their sharp differences about the fate of Syrian President Bashar Assad. (AP Photo/Alexander Zemlianichenko)

الریاض: غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق سعودی وزیر خارجہ عادل الجبیر نے جی سی سی کے انتالیسویں سربراہ اجلاس کے بعد کونسل کے سیکریٹری جنرل عبداللطیف الزیانی کے ساتھ مشترکہ نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ قطر میں ہمارے بھائی یہ بات زیادہ بہتر طور پر جانتے ہیں کہ انھیں خلیج تعاون کونسل( جی سی سی) کے فعال رکن کی حیثیت سے واپسی کے لیے کیا کرنا ہے
انھوں نے کہاکہ جی سی سی کے رکن ممالک اس بات کے خواہاں ہیں کہ قطر کے ساتھ بحران کا کونسل پر کوئی اثر نہ پڑے۔سعودی وزیر خارجہ نے کہا کہ خلیجی ریاستیں ایک خاندان کی طرح ہیں۔ان کے درمیان کسی بھی اختلاف کو خلیج گھر ہی میں طے کیا جاسکتا ہے۔قطر کے خلاف مؤقف اس لیے اختیار کیا گیا ہے کہ اس کو پالیسیاں تبدیل کرنے پر مجبور کیا جاسکے۔
خلیج تعاون کونسل نے اپنے سالانہ اجلاس کے اختتام پر ایک سات نکاتی الریاض اعلامیہ جاری کیا ہے۔ اعلامیہ میں کونسل کے رکن ممالک کے درمیان دفاع ، معیشت اور دیگر شراکت داری کے شعبوں میں اتحاد کی ضرورت پر زور دیا گیا ہے۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here