بڑے ریٹیلرز کو ایف بی آر خودکار نظام کیساتھ منسلک کرنے کیلئے 15 اگست کی ڈیڈلائن

15 اگست تک خود کار نظام کے ساتھ منسلک نہ ہونے والے ریٹیلرز کے جولائی کے سیلز ٹیکس گوشواروں میں دائر شدہ اِن پٹ ٹیکس کا 60 فیصد ادا نہیں کیا جائے گا، وفاقی بورڈ برائے ریونیو  

214

اسلام آباد: وفاقی بورڈ برائے ریونیو (ایف بی آر) نے پہلے درجے ( Tier-1) کے ریٹیلرز کو 15 اگست تک خود کو ایف بی آر سسٹم کے ساتھ منسلک کرنے کی ہدایت کر دی۔

ایف بی آر کی جانب سے بڑے ریٹیلرز کو خودکار رسید تصدیقی نظام سے منسلک کرنے کے لئے جنرل سیلز ٹیکس آرڈر نمبر 1 جاری کر دیا ہے۔

خودکار نظام کے تحت بڑے ریٹیلرز کو یکم اگست 2021ء سے اس نظام کے ساتھ منسلک کرنے کا سلسلہ جاری ہے، نشاندہی کے بعد اس نظام سے منسلک نہ ہونے والے ریٹیلرز کی فہرست ایف بی آر کی ویب سائٹ پر اپ لوڈ کر دی گئی ہے۔

یہ بھی پڑھیے:

ایف بی آر نے نئی ایکسپورٹ سہولتی سکیم 2021ء کے قوانین جاری کر دیئے

نئے مالی سال کے پہلے ماہ ایف بی آر کو ہدف سے 68 ارب روپے زائد ٹیکس آمدن

ایف بی آر نے تمام ٹیکسوں کی ادائیگی کے لئے سنگل شناختی نمبر متعارف کرا دیا

ایف بی آر کا کہنا ہے کہ 15 اگست 2021ء تک خود کار نظام کے ساتھ منسلک نہ ہونے والے ریٹیلرز کے جولائی 2021ء کے سیلز ٹیکس گوشواروں میں دائر کرنے والے اِن پٹ ٹیکس کا 60 فیصد ادا نہیں کیا جائے گا۔

فیڈرل بورڈ برائے ریونیو کے مطابق ’اگر کوئی ریٹیلر یہ سمجھتا ہے کہ وہ بڑے ریٹیلر کی فہرست میں نہیں آتا تو وہ 10 اگست تک کمشنر کو درخواست دے کر فہرست سے خارج ہو سکتا ہے۔

ایف بی آر کا مزید کہنا ہے کہ پہلے درجے میں شامل ریٹیلرز کی فہرست ہر ماہ اَپ ڈیٹ کی جائے گی اور جو ریٹیلرز اس فہرست میں موجود رہیں گے اُن کے اِن پٹ ٹیکس کا 60 فیصد سیلز ٹیکس ایکٹ 1990ء کی شق 3 کی ذیلی شق 9 اے کے تحت مسترد کر دیا جائے گا۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here