رواں مالی سال کے دس ماہ کے دوران قومی برآمدات میں نمایاں اضافہ

جولائی 2020ء سے اپریل 2021ء تک سرجیکل آلات کی برآمدات میں 14 فیصد، مچھلی 2 فیصد، گوشت 9 فیصد، چمڑے کی مصنوعات  7 فیصد، فارماسیوٹیکل 28 فیصد، سیمنٹ 1 فیصد، مصالحہ جات 4 فیصد، کٹلری 39 فیصد، برقی پنکھوں کی برآمدات میں 41 فیصد اضافہ ہوا: مشیر تجارت

202

اسلام آباد: وزیراعظم کے مشیر برائے تجارت عبدالرزاق داﺅد نے کہا ہے کہ رواں مالی سال کے دس ماہ کے دوران برآمدات میں نمایاں اضافہ ہوا ہے۔

ایک ٹویٹ میں مشیر تجارت نے کہا کہ جولائی 2020ء سے اپریل 2021ء کے دوران سرجیکل آلات کی برآمدات 14 فیصد اضافہ کے ساتھ 36 کروڑ ڈالر ڈالر رہیں جو گزشتہ مالی سال کی اسی مدت کے دوران 31 کروڑ 50 لاکھ ڈالر تھیں۔

اسی طرح مچھلی اور اس سے تیار کردہ مصنوعات کی برآمدات دو فیصد اضافہ کے ساتھ 35 کروڑ 20 لاکھ ڈالر رہیں جو گزشتہ سال کی اسی مدت کے دوران 34 کروڑ 50 لاکھ ڈالر تھیں۔

اعدادوشمار کے مطابق گوشت کی برآمدات 9 فیصد اضافہ کے ساتھ 28 کروڑ ڈالر ہو گئیں جو گزشتہ مالی سال کی اسی مدت کے دوران 25 کروڑ 70 لاکھ ڈالر تھیں۔

انہوں نے بتایا کہ رواں مال سال کے دس ماہ میں چمڑے کی مصنوعات کی برآمدات سات فیصد اضافہ کے ساتھ 23 کروڑ 90 لاکھ ڈالر جبکہ فارماسیوٹیکل مصنوعات کی برآمدات 28 فیصد اضافہ کے ساتھ 22 کروڑ 60 لاکھ ڈالر رہیں۔

اسی طرح سیمنٹ کی برآمدات دس ماہ میں ایک فیصد اضافہ کے ساتھ 22 کروڑ 50 لاکھ ڈالر رہیں جو گزشتہ سال کی اسی مدت کے دوران 22 کروڑ 30 لاکھ ڈالر تھیں۔

مشیر تجارت کے مطابق کٹلری کی برآمدات 39 فیصد اضافہ کے ساتھ 10 کروڑ ڈالر رہیں جو گزشتہ مالی سال کی اسی مدت کے دوران سات کروڑ 20 لاکھ ڈالر تھیں۔

دس ماہ کے دوران مصالحہ جات اور پاکستان کے بنے ہوئے برقی پنکھوں کی برآمدات میں بالترتیب چار فیصد اور 41 فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا، انہوں نے برآمدات میں اضافہ پر برآمدکنندگان کو مبارکباد پیش کی۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here