رواں سال 34 فیصد کم کپاس جننگ فیکٹریوں پہنچ سکی

یکم مارچ 2021ء تک ملک بھر کی جننگ فیکٹریوں میں 56 لاکھ 37 ہزار 749 گانٹھ کپاس لائی گئی جبکہ گزشتہ سال کے اسی عرصہ میں 29 لاکھ 27 ہزار 627 گانٹھ کپاس فیکٹریوں میں پہنچی تھی

174

ملتان: پاکستان کاٹن جنرز ایسوسی ایشن (پی سی جی اے) کے مطابق یکم مارچ 2021ء تک ملک بھر کی جننگ فیکٹریوں میں 56 لاکھ 37 ہزار 749 گانٹھ کپاس لائی گئی۔

رواں سیزن میں جننگ فیکٹریوں میں پہنچنے والی کپاس گزشتہ سال کے اسی عرصہ کی 29 لاکھ 27 ہزار 627 گانٹھ سے 34.18 فیصد کم رہی ہے۔

پنجاب کی فیکٹریوں میں یکم مارچ 2021ء تک 35 لاکھ ایک ہزار 580 گانٹھ کپاس آئی اور گزشتہ سال کی نسبت کمی کی شرح 31.23 فیصد رہی۔

یہ بھی پڑھیے:

کپاس کے زیرکاشت رقبہ میں کمی، ایک ارب ڈالر کی روئی درآمد

صنعتکاروں کا کاٹن یارن کی بھارت سے درآمد کی اجازت دینے کا مطالبہ

جی ڈی پی میں 19 فیصد حصہ ڈالنے والی کپاس کی پیداوار 20 سال کی کم ترین سطح پر

رواں سیزن کے دوران سندھ میں 21 لاکھ 36 ہزار 169 گانٹھ کپاس فیکٹریوں میں آئی جو گزشتہ سال کی نسبت 38.51 فیصد کم رہی، یکم مارچ 2021ء تک فیکٹریوں میں آنے والی کپاس سے 56 لاکھ 31 ہزار 191 گانٹھ روئی تیار کی گئی۔

رواں سیزن کے دوران پنجاب کا ضلع بہاولنگر پیداواری لحاظ سے پہلے نمبر پر رہا، سندھ کا ضلع سانگھڑ دوسرے اور پنجاب کا ضلع رحیم یار خان تیسرے نمبر پر موجود ہے۔

یکم مارچ 2021ء تک ضلع بہاولنگر کی جننگ فیکٹریوں میں 9 لاکھ 98 ہزار 131، سندھ کے ضلع سانگھڑ میں 7 لاکھ 91 ہزار 278 گانٹھ کپاس پہنچی جبکہ ضلع رحیم یارخان کی جننگ فیکٹریوں میں 6 لاکھ 56 ہزار 885 گانٹھ کپاس پہنچی۔

ٹیکسٹائل سیکٹر کپاس کے رواں سیزن میں یکم مارچ 2021ء تک ملک بھر سے مجموعی طور پر 53 لاکھ 75 ہزار 941 گانٹھ روئی خرید کر کے مقامی روئی کا سب سے بڑا خریدار رہا جبکہ گزشتہ سال 2020ء کے دوران ٹیکسٹائل سیکٹر نے 79 لاکھ 29 ہزار 439 گانٹھ روئی خریدی تھی۔

ٹیکسٹائل سیکٹر نے پنجاب سے یکم مارچ 2021ء تک 33 لاکھ 45 ہزار 207 گانٹھ روئی کی خریداری کی جبکہ سندھ سے یکم مارچ تک 20 لاکھ 30 ہزار 734 گانٹھ روئی خرید کی گئی۔

کاٹن جنرزایسوسی ایشن کے مطابق برآمدکنندگان نے یکم مارچ 2021ء تک مجموعی طور پر 70 ہزار 200 گانٹھ روئی کی خریداری کی۔

گزشتہ سال 2020ء میں صرف سندھ کی جننگ فیکٹریوں سے برآمدکنندگان نے 58 ہزار 666 گانٹھ خریدی تھی۔ برآمدکنندگان نے یکم مارچ 2021ء تک پنجاب سے صرف 4400 گانٹھ اور سندھ سے 65 ہزار 800 گانٹھ روئی کی خریداری کی۔

ٹریڈنگ کارپوریشن آف پاکستان نے رواں سیزن کے دوران کپاس کی بالکل خریداری نہیں گی۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here