کورونا وائرس، 2020ء کے دوران برٹش ایئر ویز کو 8.4 ارب ڈالر خسارہ

167

لندن: کورونا وائرس کی عالمگیر وبا نے جہاں عالمی معیشت کو گھٹنے ٹیکنے پر مجبور کر دیا ہے وہاں اس نے بین الاقوامی معیشت میں کھربوں ڈالر سالانہ حصہ ڈالنے والی ایوی ایشن انڈسٹری کو بھی تباہی کے دہانے پر پہنچا دیا ہے۔

وبا کے باعث عالمی سفری پابندیوں اور مسافروں کی تعداد میں کمی کی وجہ سے کئی چھوٹی ائیرلائنز خسارے کی تاب نہ لاتے ہوئے دیوالیہ ہو چکی ہیں جبکہ اکثر بڑی ائیرلائنز اربوں ڈالر خسارے کے باعث دیوالیہ پن کے قریب پہنچ چکی ہیں، بیشتر فضائی کمپنیوں نے ہزاروں ملازمین کو فارغ کر کے اخراجات میں کمی لانے کی اپنی سی کوشش کی ہے۔

برطانیہ کی سب سے بڑی ایئرلائن برٹش ایئرویز کو سال 2020ء کے دوران 6.9 ارب یورو یعنی 8.4 ارب ڈالر خسارہ ہوا ہے جس کی وجہ کورونا وائرس کے باعث سفری پابندیاں ہیں۔

ائیرلائنز کی جانب سے جاری بیان کے مطابق کورونا وائرس کے باعث اس کی کاروباری سرگرمیاں بری طرح متاثر ہوئیں اور فضائی سروس کے تعطل سے اسے 6.9 ارب یورو خسارہ ہوا جبکہ 2019ء میں 1.7 ارب یورو خالص منافع ہوا تھا۔

یاد رہے کہ یورپی یونین کی ایئرپورٹس کونسل نے حال ہی میں کہا تھا کہ یورپی ایئرپورٹس سے مسافروں کی آمدورفت میں واضح کمی ہوئی ہے اور سال 2020ء کے دوران ان ایئرپورٹس سے سفر کرنے والوں کی تعداد 2019ء کے مقابلے میں ایک ارب 72 کروڑ (70 فیصد) کم رہی۔

برٹش ایئرویز کا کہنا ہے کہ کورونا لاک ڈان کے باعث سفری پابندیوں سے سال 2020ء کے دوران اس کے مسافر سال 2019ء کے مقابلے میں 33.5 فیصد اور آمدنی سالانہ بنیاد پر قریباََ 70 فیصد کم ہو کر 7.8 ارب یورو رہی جبکہ اس کی استعداد 25.5 ارب یورو ہے۔

کورونا وبا کے باعث مسافروں کی تعداد میں نمایاں کمی اور سفری بندشوں کے باعث برطانیہ کے ہیتھرو ایئرپورٹ کو سال 2020ء کے دوران دو ارب ڈالر ٹیکس خسارے کا سامنا کرنا پڑا۔

ہیتھرو ایئرپورٹ کے چیف ایگزیکٹو نے ایک بیان میں کہا کہ کورونا وبا کے باعث مسافروں کی تعداد میں 73 فیصد کمی واقع ہوئی جس وجہ سے ایئرپورٹ کی ٹیکس آمدن میں کمی آئی ہے۔

ہیتھرو ایئرپورٹ دنیا کا مصروف ترین ہوائی اڈہ ہے، 2019ء میں اسے 54 کروڑ 60 لاکھ ڈالر قبل از ٹیکس ریکارڈ منافع حاصل ہوا تھا، سال2020ء سے قبل آخری بار 1970ء کی دہائی میں مسافروں کی تعداد میں کمی دیکھنے میں آئی تھی۔

ادھر دبئی کے بین الاقوامی ہوائی اڈے کے چیف ایگزیکٹو کا کہنا ہے کہ کورونا وائرس کی وبا کے سبب 2020ء میں متحدہ عرب امارات کے ہوائی اڈوں پر مسافروں کی آمدورفت میں 70 فیصد کمی ریکارڈ کی گئی ہے۔

دبئی ائیرپورٹ کی آپریٹر کمپنی کے مطابق گزشتہ سال کورونا وبا کے سبب سفری خدمات کے شعبے میں عالمی پابندیوں کے باعث دبئی کے ہوائی اڈے پر مسافروں کی تعداد کم ہو کر دو کروڑ 59 لاکھ پر آ گئی ہے۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here