کینسر کو شکست دینے والی خاتون کا خلائی سفر کے لیے انتخاب

164

واشنگٹن: ہڈیوں کے کینسر سے شفایاب ہونے والی ایک نوجوان امریکی خاتون ٹیکنالوجی کے شعبے کی ارب پتی شخصیت جیرڈ آئزک مین کے ساتھ پہلے نجی خلائی جہاز سپیس ایکس پر اس سال موسمِ خزاں میں خلائی سفر کیلئے روانہ ہوں گی۔

امریکی ریاست ٹینیسی میں بچوں کے کینسر پر ریسرچ کے ہسپتال سینٹ جوڈ چلڈرن ہاسپٹل نے اعلان کیا ہے کہ ہیلی آرسی نو (Hayley Arceneaux) ان کے ہسپتال کی سفیر بن کر خلا میں جائیں گی۔

Hayley Arceneaux, a cancer survivor, will be the first person with a prosthetic body part to go to space.
Hayley Arceneaux

29 سالہ ہیلی اب تک کی سب سے کم عمر امریکی ہیں جو خلا کا سفر کریں گی، جب وہ دس سال کی تھیں تو انہیں ہڈیوں کا کینسر تشخیص ہوا تاہم عزم و حوصلہ کے ساتھ ہیلی نے بچپن میں کینسر جیسے موذی مرض کو شکست دے دی تھی۔

ایک انٹرویو کے دوران ہیلی آرسی نو کا کہنا تھا کہ کینسر سے لڑائی نے انہیں خلائی سفر کے لیے تیار کیا۔ کینسر نے انہیں مضبوط بنایا اور شاید اس مرض نے انہیں سکھایا کہ غیر متوقع باتوں کی توقع رکھنی چاہیے۔

آئزک مین کو امید ہے کہ وہ اس مشن سے سینٹ جوڈ ہسپتال کے لیے دو سو ملین ڈالر کے عطیات اکھٹے کر لیں گے جس میں سے نصف وہ اپنی جیب سے ادا کریں گے۔

In 2002 when she was 10, doctors told Ms. Arceneaux she had bone cancer.
ہیلی کی 2002ء کی تصویر جب وہ ہڈیوں کے کینسر کا علاج کروا رہی تھیں

آئزک مین نے یکم فروری 2021ء کو اپنے خلائی مشن کا اعلان کیا تھا اور انہوں نے اپنے آپ کو خلائی جہاز کا کمانڈر مقرر کیا ہے۔

سپیس ایکس نامی خلائی جہاز میں چار نشستیں ہیں جن میں سے دو انہوں نے سینٹ جوڈ ہسپتال کو دے دی ہیں۔ انہیں اپنے عملے کے مزید دو ارکان کی تلاش ہے جس کا اعلان وہ مارچ میں کریں گے۔

Ms. Arceneaux at SpaceX’s headquarters in California during one of three visits she has made there to prepare for the trip to space.

سپیس ایکس اکتوبر 2021ء میں امریکی خلائی ادارے ناسا کے کینیڈی سپیس سینٹر سے پرواز بھرے گا اور ان کا جہاز دو سے چار دن تک زمین کے مدار میں گردش کرے گا تاہم انہوں نے اس مشن کے اخراجات کی تفصیلات ظاہر نہیں کیں۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here