آغا سٹیل انڈسٹریز کا 2.25 میگاواٹ شمسی بجلی پیدا کرنے کیلئے معاہدہ

2.25 میگاواٹ کے شمسی توانائی کے منصوبے سے سالانہ تقریباً 33 لاکھ یونٹس قابلِ تجدید بجلی حاصل ہو گی، کاربن کے اخراج میں 46 ہزار ٹن کمی آئے گی

353

کراچی: سٹیل بارز بنانے والی آغا سٹیل انڈسٹریز نے پورٹ قاسم پر واقع اپنے پلانٹ پر 2.25 میگاواٹ کے شمسی توانائی کے منصوبے کی تنصیب کیلئے رینیو ایبل پاور کے ساتھ ایک معاہدے پر دستخط کر دئیے ہیں۔

اس منصوبے میں میزان بینک بطور بینکنگ پارٹنر معاونت کرے گا، یہ پراجیکٹ ملک میں سٹیل مینوفیکچررز کے سولر پاور کے بڑے منصوبوں میں سے ایک ہے۔

کمپنی کی جانب سے جاری اعلامیے کے مطابق یہ منصوبہ آغا سٹیل انڈسٹریز میں گرین انقلاب کا آغاز کرے گا اور کمپنی کی توانائی کی مجموعی ضرورت کو پورا کرنے کے ساتھ ساتھ قومی گرڈ پر بوجھ کم کرنے میں مدد دے گا، 2.25 میگاواٹ کے شمسی توانائی کے منصوبے سے بیس سال کے عرصے میں کاربن کے اخراج میں 46 ہزار ٹن کمی واقع ہو گی۔

یہ بھی پڑھیے: 

آغا سٹیل کا ہورائزن سٹیل کیساتھ 10.5 ارب روپے کا معاہدہ

پاکستانی کمپنی جو جدید ٹیکنالوجی کو بروئے کار لا کر سٹیل انڈسٹری میں انقلابی تبدیلی کیلئے کوشاں ہے

اس موقع پر آغا سٹیل انڈسٹریز کے چیف ایگزکٹیو آفیسر (سی ای او) حسین آغا نے کہا کہ سٹیل کی تیاری میں بجلی ایک اہم جُز ہے اور آغا سٹیل نے شمسی توانائی کے ذریعے بجلی حاصل کرکے اپنی پیداواری لاگت کو کم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ستمبر 2021ء تک آغا اسٹیل میں میڈا ٹیکنالوجی کی تنصیب کا امکان ہے جس سے بجلی کی کھپت میں 20 فیصد تک کمی اور پیداواری عمل کے دوران خام مال کے نقصانات میں آٹھ  فیصد کمی واقع ہو گی۔

حسین آغا کا کہنا تھا کہ پائیدار ترقی کے اہداف کے تحت ان کا وژن ہے کہ 2025ء تک فوسل فیول پر صفر فیصد انحصار کے ساتھ پاکستان کی پہلی گرین سٹیل مینوفیکچرر کمپنی بن جائیں، سولر پاور پلانٹ خودانحصاری کی بنیاد پر نصب کیا جا رہا ہے، اس سے سالانہ تقریباً 33 لاکھ یونٹس صاف اور قابلِ تجدید بجلی حاصل ہو گی جس کے نتیجے میں آغا سٹیل انڈسٹریز کے کاربن کے اخراج میں نمایاں کمی واقع ہو گی۔

انہوں نے مزید کہا کہ آغا سٹیل اس وقت اپنے پلانٹ کے توسیعی منصوبے پر کام کر رہی ہے جس سے کمپنی کی ریبار سریا بنانے کی موجودہ صلاحیت اڑھائی لاکھ ٹن سے بڑھا کر ساڑھے چھ لاکھ ٹن کی جائے گی، قدرتی وسائل کے کم سے کم استعمال کیلئے ہم خام مال کیلئے سکریپ استعمال کرتے ہیں۔

حسین آغا نے کہا کہ پراجیکٹ کیلئے رینیو ایبل پاور کے ساتھ شراکت داری پر ہمیں خوشی ہے جو آغا سٹیل انڈسٹریز میں گرین سٹیل انقلاب کا آغاز کرے گا جس سے کمپنی، سوسائٹی اور ماحول پر طویل المدّتی مثبت اثرات مرتب ہوں گے۔

انہوں نے کہا کہ شمسی توانائی کا یہ منصوبہ 2030ء تک کم کاربن اور قابلِ تجدید توانائی پر انحصار کرنے والی ملکی معیشت کے ہدف کو سپورٹ فراہم کرنے کے ساتھ ساتھ موسمیاتی تبدیلیوں کا مقابلہ کرنے کیلئے گرین ہاﺅس گیس کے اخراج کو کم کرنے کے قومی ہدف میں بھی معاون ثابت ہو گا۔ اس موقع پر میزان بینک کے ڈپٹی چیف ایگزیکٹو آفیسر عارف الاسلام نے آغا سٹیل کے گرین سٹیل کے اقدام کو سراہا۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here