ملائیشیا سے پاکستان کو ترسیلات زر میں 18 فیصد کمی

182

اسلام آباد: ڈاکٹر مہاتیر محمد کے دیس ملائیشیا میں مقیم پاکستانیوں کی جانب سے ترسیلات زر میں جاری مالی سال کے پہلے پانچ مہینوں میں گزشتہ مالی سال کے اسی عرصہ کے مقابلہ میں 18 فیصد کمی ریکارڈ کی گئی ہے۔

سٹیٹ بینک آف پاکستان (ایس بی پی) کی جانب سے جاری کردہ اعدادوشمار کے مطابق جولائی سے لے کر نومبر 2020ء تک کی مدت میں ملائیشیا میں مقیم پاکستانیوں نے 90.6  ملین ڈالر کا زرمبادلہ ملک ارسال کیا جو گزشتہ مالی سال کے اسی عرصہ کے مقابلہ میں 18 فیصد کم ہے۔

گزشتہ مالی سال 2019-20ء کے ابتدائی پانچ ماہ (جولائی تا نومبر) کے دوران ملائیشیا میں مقیم پاکستانیوں نے 110.5 ملین ڈالر کی ترسیلات زر پاکستان بھیجیں تھیں۔

یہ بھی پڑھیے: 

مسلسل چھٹے ماہ پاکستان کی ترسیلات زر دو ارب ڈالر سے زائد

آسٹریلیا میں مقیم پاکستانیوں کی ترسیلات زر میں نمایاں اضافہ

نومبر 2020ء میں ملائیشیا میں مقیم پاکستانیوں نے 17.3 ملین  ڈالرکا زرمبادلہ ملک ارسال کیا جبکہ گزشتہ سال نومبر میں ملائیشیا میں مقیم پاکستانیوں نے 27.1 ملین ڈالر کا زرمبادلہ ملک ارسال کیا تھا۔

حکومت کی جانب سے قانونی ذرائع سے ترسیلات زر ملک ارسال کرنے کیلئے سہولیات و ترغیبات دینے کے نتیجہ میں جاری مالی سال کے پہلے پانچ مہینوں میں گزشتہ مالی سال کے اسی عرصہ کے مقابلہ میں مجموعی طور پر 26.9 فیصد کا نمایاں اضافہ ہوا ہے۔

جاری مالی سال کے پہلے پانچ مہینوں میں سمندر پار پاکستانیوں نے 11.76 ارب ڈالر کا زرمبادلہ ملک ارسال کیا جبکہ گزشتہ مالی سال کی اسی مدت میں ترسیلات زر کا حجم 9.27 ارب ڈالر رہا تھا۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here