دو ماہ میں شعبہ توانائی  میں براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری میں 162.5 فیصد اضافہ

جولائی اور اگست میں تھرمل ذرائع سے بجلی پیدا کرنے کے شعبہ میں 32.7 ملین، ہائیڈرو پاور منصوبوں میں 9.3 ملین ڈالر بیرونی سرمایہ کاری آئی

117

اسلام آباد: جاری مالی سال کے ابتدائی دو ماہ (جولائی، اگست) کے دوران پاکستان کے شعبہ توانائی  میں براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری (ایف ڈی آئی) میں گزشتہ سال کے اسی عرصہ کے مقابلے میں 162.5 فیصد اضافہ دیکھا گیا ہے۔

سٹیٹ بینک آف پاکستان (ایس بی پی) کی جانب سے اس حوالہ سے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق جولائی اور اگست 2020ء میں ملک میں بجلی کی پیداوار کے شعبہ میں مجموعی طور 42 ملین ڈالر کی براہ راست غیرملکی سرمایہ کاری آئی، گزشتہ مالی سال کے ابتدائی دو ماہ میں بجلی پیدا کرنے کے شعبہ میں براہ راست غیرملکی سرمایہ کاری کا حجم 16 ملین رہا تھا۔

تھرمل ذرائع سے بجلی پیدا کرنے کے شعبہ میں مالی سال کے پہلے دو ماہ میں 32.7 ملین ڈالر کی براہ راست غیرملکی سرمایہ کاری ہوئی، گزشتہ مالی سال کی اسی مدت میں تھرمل ذرائع سے بجلی پیدا کرنے کے شعبہ میں 17.1 ملین ڈالر براہ راست غیرملکی سرمایہ کاری ہوئی تھی۔

ہائیڈرو پاور (پانی سے بجلی کی پیداوار) کے منصوبوں میں جاری مالی سال کے پہلے دو ماہ میں 9.3 ملین ڈالر کی براہ راست غیرملکی سرمایہ کاری ریکارڈ کی گئی۔ گزشتہ مالی سال کے پہلے دو ماہ میں ہائیڈرو پاور منصوبوں میں 20.2 ملین ڈالر کی براہ راست غیرملکی سرمایہ کاری ہوئی تھی۔

کوئلہ سے بجلی پیدا کرنے کے منصوبوں میں جاری مالی سال کے پہلے دوماہ میں کوئی براہ راست غیرملکی سرمایہ کاری نہیں کی گئی۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here